Monday | 19 August 2019 | 18 Dhul-Hajj 1440

Fatwa Answer

Question ID: 114 Category: Business Dealings
Enrolling in 401K Plan with Restricted Options

Assalamualaikum Warahmatullah 

I hope that you are in the best state of eeman and health when you receive this message. My company provides a 401K plan but all the options are restricted in the sense that I do not know where the money is going to be invested. I have called my company as well as the company which manages the 401K portfolio and there is no way to manage the portfolio myself or invest somewhere based on my choice or preference. Whatever they invest in (even if it is a haram business such as a brewery), they will invest my money in as well.

In this situation and is it permissible to invest in such a a 401K plan? Or should I completely not participate to be on the safe side.

I would appreciate your insight in this matter.

JazakAllah

Walikumassalam Warahmatullah

الجواب وباللہ التوفیق

Firstly we do not have knowledge of the company, their method and areas of investments in which they use this money and in the light of other similar questions certain conditions in these types of accounts are deemed Un-Islamic. For example, you cannot take this invested money back until a certain point in time and in case you request to take it back you are faced with paying penalties and taxes. The second thing mentioned in your question is that the money can be invested in any business or investment opportunity, whether halal or haram, and you will not have knowledge of where the money actually has been invested. In principle, one of the basic conditions to get involved in an investment opportunity is to ensure that the money is being invested in a halal business. Additionally, such companies are usually not free from interest based transactions either, therefore, the cause for permissibility of such investment does not seem valid. It will be better to ask the question again by providing all the relevant details.

واللہ اعلم ابالصواب

Question ID: 114 Category: Business Dealings
401کے پلان

 

 

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

میں امید کرتا ہوں کہ میری ای میل آپ کو ایمان اور صحت کی بہترین حالت میں موصول ہورہی ہوگی۔ میری کمپنی ۴۰۱ کے پلان فراہم کرتی ہے، لیکن اس کے اندر موجود آپشن محدود اور نہ تبدیل ہونے والے ہیں۔ مثال کے طور پر مجھے یہ علم نہیں ہوگا کہ جو پیسہ میں ہر مہینے ۴۰۱ کے اکاؤنٹ میں ڈال رہا ہوں وہ میری کمپنی کس قسم کے بزنس میں انوسٹ کرے گی۔ میں نے اس سلسلے میں کمپنی اور اس کمپنی جو ہمارے جمع شدہ پیسوں کو انوسٹ کرتی ہے سے رابطہ پیدا کیا ہے لیکن بظاہر ایسا کوئی طریقہ نہیں جس کے ذریعے میں ان پیسوں کو اپنی مرضی کے حلال بزنسز میں انوسٹ کروا سکوں۔وہ جس بزنس میں انوسٹ کرنا چاہیں (چاہیں وہ حرام ہی کیوں نہ ہو مثلا شراب کشی کی کپنیاں) وہ میرے پیسے کو بھی انوسٹ کریں گے۔

کیا اس صورتحال میں اس قسم کے ۴۰۱ کے پلان میں حصہ لینا جائز ہے یا پھر بالکل بھی اس کا حصہ نہیں بننا چاہئے؟ میں آپ کی اس سلسلہ میں راہنمائی پر بڑا ممنون رہوں گا۔

جزاک اللہ ۔

 

 

وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

الجواب وباللہ التوفیق

اولا تو اس کمپنی کی تفاصیل اور اس میں رقم انوسٹ کرنے کی کیفیت کا ہمیں علم نہیں ہے،اور پھر اس اکاؤنٹ سے متعلق دیگر سوالات کی روشنی میں اس کی بعض شرائط غیر شرعی معلوم ہوتی ہیں،مثلا ایک مدت سے قبل آپ اس میں انوسٹ کی ہوئی رقم دوبارہ نہیں لے سکتے،لینے کی صورت میں جرمانہ اور ٹیکسس کی ادائیگی کا مسئلہ درپیش ہوتا ہے، اور پھر آپ نے اس سوال میں دوسری چیز یہ ذکر کی ہےکہ انوسٹ کی ہوئی رقم جائز تجارت اور سرمایہ کاری میں بھی لگائی جاسکتی ہے اور ناجائز اور حرام سرمایہ کاری میں بھی لگائی جاسکتی ہے،اور اس کا آپ کو علم نہیں دیاجائے گا،جب کہ رقم کے انوسٹ کرنے کی بنیادی شرائط میں ایک شرط یہی ہےکہ جائز سرمایہ کاری میں اس کو لگایا جائے،اور اس کے علاوہ اس طرح کی کمپنیاں عام طور پر سودی معاملات سے بھی خالی نہیں ہوتی،اس لئے بظاہر اس کمپنی میں رقم انوسٹ کرنے کی جواز کی صورت نظر نہیں آتی۔مناسب ہے کہ اس کی ساری تفصیل لکھ کر دوبارہ آپ مسئلہ معلوم کرلیں۔

فقط واللہ اعلم ابالصواب