Tuesday | 20 November 2018 | 12 Rabiul-Awal 1440

Fatwa Answer

Question ID: 216 Category: Business Dealings
Selling Insurance Plans for Credit Cards

Assalamualaikum

I have an interview in a financial company which deals with credit card and sell insurance on it. I have to attend calls, resolve the queries and later pitch an insurance sale to the customer. Is it halal or forbidden?

JazakAllahu Khaira

Walaikumassalam Warahmatullah

الجواب وباللہ التوفیق

Working in such a job is impermissible. May Allah Subhanahu Wa Ta'ala provide you with a better job with ease and aafeeyah (aameen).

يَٰٓأَيُّهَا ٱلَّذِينَ ءَامَنُوٓا۟ إِنَّمَا ٱلْخَمْرُ وَٱلْمَيْسِرُ وَٱلْأَنصَابُ وَٱلْأَزْلَٰمُ رِجْسٌۭ مِّنْ عَمَلِ ٱلشَّيْطَٰنِ فَٱجْتَنِبُوهُ لَعَلَّكُمْ تُفْلِحُونَ (المائدہ:۹۰)

وَلَا تَعَاوَنُوا۟ عَلَى ٱلْإِثْمِ وَٱلْعُدْوَٰنِ وَٱتَّقُوا۟ ٱللَّهَ ۖ إِنَّ ٱللَّهَ شَدِيدُ ٱلْعِقَابِ(المائدہ:)

ولا يجوز الاستئجار على الغناء والنوح وكذا سائر الملاهي لأنه استئجار على المعصية والمعصية لا تستحق بالعقد (الہدایہ:۳؍۲۴۰)

فان کان عمل الموظف فی البنک ما یعین علی الربا کالکتابۃ او الحساب فذالک حرام بوجہین الاول الاعانۃ علی العصیۃ،والثانی اخذ الاجرۃ من المال الحرام (۱؍۲۱۹)

فقط واللہ اعلم بالصواب

 

 

Question ID: 216 Category: Business Dealings
کریڈٹ کارڈ پر انشورنس بیچنے کی جاب

السلام علیکم

میرا ایک فائننشل کمپنی کے ساتھ انٹرویو ہونے والا ہے ، جو کریڈٹ کارڈ سے متعلق ہے اور اس کے اوپر انشورنس بیچنے کا کام کرتی ہے۔ مجھے ان کے لئے موصول ہونے والی فون کالز سننا ہوں گی، لوگوں کے مسائل کو حل کرنا ہوگا اور آخر میں ان کو وہ انشورنس خریدنے کی ترغیب دینی پڑے گی۔ کیا یہ جاب کرنا جائز ہو گا یا نہیں؟ کیا آپ اس سلسلے میں میری مدد کر سکتے ہیں؟

وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

الجواب وباللہ التوفیق

یہ ملازمت جائز نہیں ہے۔حق تعالیٰ دوسری ملازمت کے لئے آسانیاں اور اسباب پیدا فرمائے۔(آمین)

يَٰٓأَيُّهَا ٱلَّذِينَ ءَامَنُوٓا۟ إِنَّمَا ٱلْخَمْرُ وَٱلْمَيْسِرُ وَٱلْأَنصَابُ وَٱلْأَزْلَٰمُ رِجْسٌۭ مِّنْ عَمَلِ ٱلشَّيْطَٰنِ فَٱجْتَنِبُوهُ لَعَلَّكُمْ تُفْلِحُونَ (المائدہ:۹۰)

وَلَا تَعَاوَنُوا۟ عَلَى ٱلْإِثْمِ وَٱلْعُدْوَٰنِ وَٱتَّقُوا۟ ٱللَّهَ ۖ إِنَّ ٱللَّهَ شَدِيدُ ٱلْعِقَابِ(المائدہ:)

ولا يجوز الاستئجار على الغناء والنوح وكذا سائر الملاهي لأنه استئجار على المعصية والمعصية لا تستحق بالعقد (الہدایہ:۳؍۲۴۰)

فان کان عمل الموظف فی البنک ما یعین علی الربا کالکتابۃ او الحساب فذالک حرام بوجہین الاول الاعانۃ علی العصیۃ،والثانی اخذ الاجرۃ من المال الحرام (۱؍۲۱۹)

فقط واللہ اعلم بالصواب