Thursday | 14 November 2019 | 17 Rabiul-Awal 1441

Fatwa Answer

Question ID: 317 Category: Miscellaneous
Want to become Aalim

Assalamualaikum,

My name is Muhammad and I am 16 years old. I live in North Carolina. When I completed 7th grade in public school, I asked my parents to put me in full-time hifz program and they agreed. I started hifz at 13 and finished at 15 الحمد لله. During that time I was doing homeschooling. Now I finished 10th grade while homeschooling and will be going into 11th grade starting this September. I want to become an Alim and do Iftaa after. My parents are saying no, I have to complete 11th and 12th grade in public school then go to college and get a degree. They are saying after I get a degree, then maybe I can join Alim Course. What I want to do is start Alim Course now and get a GED (High School Diploma) concurrently. Then finish Alim Course around 22 or 23 and finish Iftaa by 24 or 25. After that, I can get a degree if it is necessary. If I go to public school and college right now I will most likely get a degree at 22, and after Alim and Iftaa I will be over 30! Also if I go the school route, I might not be as enthusiastic about joining Alim Course then. I know having a degree might help in terms of having knowledge, but as an Alim or a Mufti I think you can teach Islam and be an Imam without a degree as many scholars are Alims and Muftis and have no secular degree. Where I live, many of the scholars here completed hifz and then went to Darul Uloom Zakariyya in SA whilst having a GED. Please tell me how I can persuade my parents. Today is the 14th of August, 2018, I only have less than month until public school opens. Coincidentally, Alim classes in New York start the same day public school opens. What I want to do is start next month (September) and complete I'daadiyah and 5 years of Alim Course in New York and then do Dora e Hadith and Iftaa in South Africa ان شاء الله. Please advise me what to do, as I really want to become Islamic scholar and please make dua my parents let me join Alim Course now in September. Please reply back whenever you have time.

جزاك اللهُ خيراً

الجواب وباللہ التوفیق

Your passion and zeal is very great. May Allaah T’alaa approve of and accept it and bestow upon you the سعادتیں (good fortunes) of both the Deen and Duniya. In your country there are several Ahl e Haq Ulama (the Scholars with the True Knowledge of Deen), especially Hazrat e Aqdas Mufti Shah Muhammad Nawal ur Rahman Saheb Damat Barakatuhum is also there in Chicago. Please meet him and directly make consultation with him that will be more appropriate.

والسلام

Question ID: 317 Category: Miscellaneous
عالم بننا چاہتا ہوں

السلام علیکم 

میرا نام محمد ہے اور میں ۱۶ سال کا ہوں۔ میں نارتھ کیرولائنا میں رہتا ہوں۔ جب میں نے پبلک سکول میں ساتویں جماعت مکمل کی، تو میں نے اپنے والدین سے مجھے فل ٹائم حفظ پروگرام میں ڈالنے کی درخواست کی اور وہ راضی ہو گئے۔ میں نے تیرہ سال کی عمر میں حفظ شروع کیا اور الحمدللہ پندرہ سال کی عمر میں مکمل کر لیا۔ اس دوران میں گھر میں ہی دنیاوی پڑھائی کرتا رہا۔  اب میں نے گھر میں ہی پڑھتے ہوئے دسویں جماعت مکمل کرلی ہے اور ستمبر ۲۰۱۸؁ء میں  گیارہویں جماعت میں جاؤں گا، میں عالم بننا چاہتا ہوں اور اس کے بعد افتا کرنا چاہتا ہوں۔ لیکن میرے والدین  نہیں کہہ رہے ہیں وہ کہہ رہے ہیں کہ میں پبلک اسکول میں جاکر گیارہویں اور بارہویں جماعت مکمل کروں اور پھر کالج جاؤں اور ڈگری مکمل کروں ، وہ کہہ رہے ہیں کہ جب میں ڈگری جاصل کرلوں تو شاید پھر میں عالم کورس میں داخلہ  لے سکتا ہوں  میں یہ چاہتا ہوں کہ عالم کورس ابھی شروع کرلوں اور  ساتھ ساتھ   ثانی اسکول بھی پورا کرلوں ، پھر ۲۲ یا ۲۳ سال کی عمر تک عالم کورس مکمل کرلوں اور ۲۴ یا ۲۵ سال کی عمر تک افتا پورا کرلوں ، اس کے بعد میں ڈگری حاصل کرسکتا ہوں، اگر ضروری ہوا ۔ اگر میں ابھی پبلک اسکول یا کالج جاتا ہوں تو میں بہت ممکن ہے کہ ڈگری ۲۲ سال کی عمر تک پوری کروں، اور عالم اور افتا کے بعد میری عمر (۳۰) تیس سال سے اوپر ہوجائے گی، اس کے علاوہ ڈگری  کرنے کے بعد شاید مجھے اس وقت تک عالم بننے کا اتنا شوق نہ رہے۔

میں جانتا ہوں  کہ ڈگری سے مجھے معلومات علم حاصل کرنے میں مدد ملے گی لیکن ایک عالم یا مفتی کے طور پر آپ اسلام سکھا اور پڑھاسکتے ہیں، اور امام بن سکتے ہیں بغیر ڈگری کے جیسا کہ بہت سے علماء عالم اور مفتی ہیں اور ان کے پاس کوئی سیکولر ڈگری نہیں ہے، جہاں میں رہتا ہوں وہاں بہت سے علمانے حفظ مکمل کیا اور صرف ثانی اسکول مکمل کرکے (بارہ جماعتیں) دارالعلوم زکریا ساؤتھ افریقہ چلے گئے، برائے مہربانی مجھے بتائیے کہ میں اپنے والدین کو کیسے اس پر آمادہ کرسکتا ہوں، نیویارک میں عالم کلاسس اسی وقت شروع ہوتی ہیں جب ثانی اسکول  شروع ہوتا ہے ۔

میں یہ چاہتا ہوں کہ ستمبر ۲۰۱۸؁ء میں عالم کورس شروع کرلو اور اعدادیہ  اور عالم کورس کے ۵ سال نیویارک میں مکمل کرلوں اور پھر انشاء اللہ  دورۂ حدیث اور افتاء ساؤتھ افریقہ میں مکمل کرلوں۔

برائے مہربانی مجھے بتائیے کہ میں کیا کروں، کیونکہ میں  بہت چاہتا ہوں کہ اسلامک سکالر بن جاؤں اور دعا کیجئے برائے مہربانی کہ میرے والدین مجھے ستمبر میں عالم کورس شروع کرنے کی اجازت دے دیں  ،برائے مہربانی اس کا  جواب دیجئے۔

جزاک اللہ خیرا

الجواب وباللہ التوفیق

آپ کا جذبہ اور شوق بہت اچھا ہے،اللہ جل جلالہ اس کو قبول و منظور فرمائے،اور آپ کو دین و دنیا دونوں کی سعادتیں نصیب فرمائے،آپ کے مقام مذکور پر بہت سے اہل حق علماء کرام موجود  ہیں،خاص طور پر حضرت اقدس مفتی شاہ محمد نوال الرحمن صاحب دامت برکاتہم بھی ہیں،ان سے مل کر براہ راست مشورہ کرلیں ،زیادہ مناسب رہے گا

والسلام