Monday | 11 November 2019 | 14 Rabiul-Awal 1441

Fatwa Answer

Question ID: 335 Category: Etiquettes
Etiquettes of Sleeping

Assalamualaikum,

I would like to know what are the sunnahs before sleeping? Can you please suggest me a name for a book where I can find all the sunnahs of Prophet Muhammad صلی اللہ علیہ وسلم (Urdu or English)?

Jazakallah khair

                                         الجواب وباللہ التوفیق

Following are the Sunnats before sleeping:

1) To sleep early

’’کان یکرہ النوم قبل صلوۃ العشاء والحدیث بعدھا‘‘(بخاری: باب مایکرہ من النوم، حدیث:۴۵۳)

2) To make Wudu before sleeping

’’اذا أتیت مضجعک فتوضا وضوءک للصلاۃ‘‘ (بخاری:باب اذا بات طاھرا،حدیث:۵۹۵۲)

3) To do Miswaak

It’s narrated by Hazrat Huzaifah:

’’کان یستاک اذا اخذ مضجعہ واذا قام من اللیل واذا خرج الی الصبح ‘‘(کنز العمال: السواک، حدیث:۲۶۹۷۶)

4) To wash away if there is any greasiness of the oil on the hands before sleeping

’’من نام و بیدہ غمز قبل ان یغسلہ فأصابہ شئی فلا یلومن الانفسہ‘‘(الأدب المفرد: ۱۲۲۰)

5) To sleep on the right side, meaning to put right hand under the right cheek and sleep on the right side

It’s narrated by Hazrat Bara bin ‘Aazib رضی اللہ عنہ:

’’اذا أوی الی  فراشہ نام علی شقہ الأیمن‘‘(بخاری: باب وضع الید الیمنی تحت خدہ، حدیث:۵۹۵۶)

It’s narrated by Hazrat Huzaifah رضی اللہ عنہ:

عن حذیفۃ رضي اللّٰہ عنہ قال: کان رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم إذا أخذ مضجعہ من اللیل وضع ید علی خدہ، ثم قال: باسمک۔ (عمل الیوم واللیلۃ ۶۵۰)

6) To stay away from sleeping on the left side or on the belly

It’s narrated by Hazrat Talha bin Qais رضی اللہ عنہ:

’’ ان ھذہ ضجعۃ یبغضھا اللہ‘‘ (ابوداؤد: باب فی الرجل ینبطح علی بطنہ، حدیث:۵۰۴۰، ریاض الصالحین۔ ۱۰- ۲۷۳

 ‘Allamah Nawwawi رحمت اللہ علیہ has stated this Hadith to be صحیح in ریاض الصالحین

7) To sleep facing Qiblah

If the Qiblah is towards the right side while sleeping then both Sunnats of sleeping on the right side and facing Qiblah will be followed, however, if one sleeps in the way that he is lying down on the right side but it’s not in the direction of Qiblah then the Sunnat of facing Qiblah will not be followed. But it should be clear that both these points are from Sunnan e Zawaid, if one leaves them then it won’t be considered any sin.

عن عائشۃ رضي اللّٰہ عنہا أنہا قالت: کان رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم یأمر بفراشۃ فیفرش لہ فیستقبل القبلۃ فإذا آویٰ إلیہ توسّد کفہ الیمنی ثم ہمس۔ (مجمع الزوائد ۱۰؍۱۲۱)

8) To wipe the bedding before sleeping (صحیح بخاری:۶۳۲)

9) To recite the Du’aa. In the Hadith there are different wordings of the Du’aa, whichever one remembers should read them:

’’اللھم قنی عذابک یوم تبعث عبادک‘‘(ترمذی: ۳۳۹۸)

اللهُمَّ بِاسْمِكَ أَمُوتُ وَأَحْيَا

اللھم اسلمت نفسی الیک، ووجھت وجھی الیک، وفوضت امری الیک، والجات ظھری الیک،رغبۃ ورھبۃ الیک، ولامنیی الا الیک، امنت بکتابک الذی انزلت ونبیک الذی ارسلت۔(بخاری:باب مایقول اذا نام، حدیث:۵۹۵۴)

10) To read other narrated Azkaar

For example, Surah Mulk, Last two Aayaat of Surah Baqarah, Aayat ul Kursi, Last three Quls 3, 3 times, 33 times Subhanallah, 33 times Alhamdulillah, 34 times Allah u Akbar, and

  اعوذ بکلمات اللہ التامات من شر ماخلق  ۔ (ترمذی: ۳۴۳۷)

11) To turn off lamp, light, etc. before sleeping

Nabi صلی اللہ علیہ و سلم has said:

’’لا تترکوا النار فی بیوتکم حتی تنامون‘‘(بخاری: باب لا تترک النار  فی البیت عند النوم، حدیث: ۵۹۳۵)

12) To have some light in the room, not to have total darkness

13) To close all doors of the house saying Bismillah (مسلم:کتاب الاشربۃ، حدیث:۲۰۱۲)

14) To cover all utensils (مسلم:باب الأمر بتغطیۃ الاناء، حدیث:۲۰۱۲)

15) To change regular clothes with light clothes which is comfortable for sleeping (بخاری: سورۃ ال عمران، حدیث:۴۲۹۴)

16) The bedding shouldn’t be so comfortable that it makes it hard to get up in the morning

(شمائل ترمذی: باب ما جاء فی فراش النبی صلی اللہ علیہ وسلم )

17) To thank Allaah T’aalaa if one sees a good dream (بخاری: ۶۶۳۷)

18) If one sees a bad or scary dream, one should seek refuge from Allaah T’aalaa from that dream and shouldn’t mention it to anyone and saying the following Du’aas should make spitting motion towards left side and changing side go back to sleep:  

’’اعوذ باللہ من الشیطن الرحیم‘‘   (بخاری: باب من رأی النبی صلی اللہ علیہ وسلم فی المنام ، حدیث: ۶۵۹۴)

or recite this Du’aa:

’’اعوذ بکلمات اللہ التامۃ من غضبہ وعقابہ وشر عبادہ ومن ھمزات الشیطین وان یحضرون‘‘ (ابوداؤد:ؔ ۳۸۹۳)

19) To apply سرمہ (Surmah collyrium) three three times to both eyes (شمائل ترمذی: ۴)

20) To make استغفار (seek forgiveness) before sleeping (سنن ترمذی:۳۳۹۷)

21) To clear one’s heart from jealously and malice before sleeping (سنن ترمذی:۲۶۷۸)

22) To sleep making intention to wake up for Tahajjud (سنن نسائی:۱۷۸۸)

23) To go to sleep doing ذکر (Zikr) (آل عمران :۱۹۱)

24) Two men or two women not to sleep together in one bed (سنن ترمذی:۲۷۹۳)

25) Not to sleep at such a place where from there is risk of falling down (سنن ابو داؤد :۵۰۴۱)

26) Not to sleep among a sitting crowd (مجمع الزوائد:۱۳۱۸۶)

27) Not to sleep on a path way or where people walk by (مجمع الزوائد:۱۳۱۸۶)

28) To recite this Du’aa after waking up الْحَمْدُ لِلَّهِ الَّذِي أَحْيَانَا بَعْدَمَا أَمَاتَنَا وَإِلَيْهِ النُّشُورُ

This summary of the Sunnats and Etiquettes of sleeping is mentioned in the light of the Ahadith. The details regarding them can be seen in the following books:

اسورہٴ رسوم اکرم صلی اللہ علیہ وسلم (Uswah e Rasool e Akram صلی اللہ علیہ وسلم)

خصائص نبوی شرح شمائل ترمذی (KhaSaiS e Nabawi Sharah Shamail e Tirmizi)

شمائل کمبری (Shamail e Kubraa)

مسنون معاشرت“ احکام و آداب اسوہٴ نبوی کی روشنی" (Masnoon Ma’aasharat – The Rulings and Etiquettes in the light of the Example of Nabi صلی اللہ علیہ وسلم)

سنن و آداب (Sunan o Aadaab)

واللہ اعلم بالصواب

Question ID: 335 Category: Etiquettes
سونے کی سنتیں

السلام علیکم

میں معلوم کرنا چاہتا ہوں کہ سونے سے پہلے کی سنتیں کیا ہیں؟ برائے مہربانی  مجھے نبی ﷺ کی سنتوں کے بارے میں  اردو یا انگریزی میں کوئی کتاب بتادیجئے

جزاک اللہ خیرا

الجواب وباللہ التوفیق

سونے سے پہلے کی سنتیں درج ذیل ہیں:

 (۱)جلد سونا

’’کان یکرہ النوم قبل صلوۃ العشاء والحدیث بعدھا‘‘(بخاری: باب مایکرہ من النوم، حدیث:۴۵۳)

(۲)سونے سے پہلے وضو کرنا

’’اذا أتیت مضجعک فتوضا وضوءک للصلاۃ‘‘ (بخاری:باب اذا بات طاھرا،حدیث:۵۹۵۲)

(۳)مسواک کرنا۔ حضرت حذیفہ رضی اللہ عنہ ے مروی ہے:

 ’’کان یستاک اذا اخذ مضجعہ واذا قام من اللیل واذا خرج الی الصبح ‘‘(کنز العمال: السواک، حدیث:۲۶۹۷۶)

(۴)سونے سے پہلے ہاتھ پر تیل وغیرہ کی چکناہٹ لگی ہو تو دھوکر سونا

’’من نام و بیدہ غمز قبل ان یغسلہ فأصابہ شئی فلا یلومن الانفسہ‘‘(الأدب المفرد: ۱۲۲۰)

(۵)داہنی کروٹ پر سونا

یعنی دائیں ہاتھ کو دائیں رخسار کے نیچے رکھے،اور کروٹ پر سوئے

حضرت براء بن عازب رضی اللہ عنہ   سے روایت ہے:’’اذا أوی الی  فراشہ نام علی شقہ الأیمن‘‘(بخاری: باب وضع الید الیمنی تحت خدہ، حدیث:۵۹۵۶)

عن حذیفۃ رضي اللّٰہ عنہ قال: کان رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم إذا أخذ مضجعہ من اللیل وضع ید علی خدہ، ثم قال: باسمک۔ (عمل الیوم واللیلۃ ۶۵۰)

(۶)بائیں کروٹ اور پیٹ کے بل(اوندھے منہ) سونے سے پرہیز کرنا

حضرت طلحہ بن قیس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے:

’’ ان ھذہ ضجعۃ یبغضھا اللہ‘‘ (ابوداؤد: باب فی الرجل ینبطح علی بطنہ، حدیث:۵۰۴۰، ریاض الصالحین۔ ۱۰- ۲۷۳

علامہ نوویؒ نے ریاض الصالحین: ۱؍۲۷۳، میں اس روایت کو صحیح کہا ہے۔)

(۷)قبلہ رخ سونا

اگر داہنی کروٹ کے ساتھ قبلہ رخ ہوگاتو دونوں سنتیں ادا ہوں گی۔ اور اگر اِس طرح لیٹا جائے کہ داہنی کروٹ تو ہوجائے لیکن قبلہ کی طرف رخ نہیں ہوتو قبلہ رخ ہونے کی سنت پر عمل نہیں ہوگا ۔لیکن واضح رہے کہ یہ دونوں چیزیں سنن زوائد میں سے ہیں، جن کے ترک پر کوئی گناہ لازم نہیں آتا

 عن عائشۃ رضي اللّٰہ عنہا أنہا قالت: کان رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم یأمر بفراشۃ فیفرش لہ فیستقبل القبلۃ فإذا آویٰ إلیہ توسّد کفہ الیمنی ثم ہمس۔ (مجمع الزوائد ۱۰؍۱۲۱)

(۸)سونے سے پہلے بستر وغیرہ کو جھاڑ لینا۔(صحیح بخاری:۶۳۲)

(۹)دعا پڑھنا

حدیث میں دعا کے مختلف الفاظ ہیں،ان میں سے جو یاد ہو پڑھے۔’’اللھم قنی عذابک یوم تبعث عبادک‘‘(ترمذی: ۳۳۹۸)

اللهُمَّ بِاسْمِكَ أَمُوتُ وَأَحْيَا

اللھم اسلمت نفسی الیک، ووجھت وجھی الیک، وفوضت امری الیک، والجات ظھری الیک،رغبۃ ورھبۃ الیک، ولامنیی الا الیک، امنت بکتابک الذی انزلت ونبیک الذی ارسلت۔(بخاری:باب مایقول اذا نام، حدیث:۵۹۵۴)

(۱۰)۔دیگر منقول اذکار پڑھنا

جیسے سورہ ملک،سورہ بقرہ کی اخیر کی دوآیات،آیت الکرسی ،تینوں قل تین تین دفعہ، ۳۳؍ بار سبحان اللہ، ۳۳؍ بار الحمدللہ، ۳۳؍بار اللہ اکبر پڑھے اور  اعوذ بکلمات اللہ التامات من شر ماخلق  وغیرہ پڑھنا۔ (ترمذی: ۳۴۳۷)

 (۱۱)سونے سے قبل چراغ، روشنی وغیرہ بجھانا

حضور ﷺ کا ارشادِ گرامی ہے:’’لا تترکوا النار فی بیوتکم حتی تنامون‘‘(بخاری: باب لا تترک النار  فی البیت عند النوم، حدیث: ۵۹۳۵)

(۱۲)بلکل اندھیرا نہ کرنا بلکہ ہلکی سی روشنی  بھی رکھنا

(۱۳)سونے سے پہلےبسم اللہ کہہ کر گھر کے سارے دروازے بندکرنا ۔(مسلم:کتاب الاشربۃ، حدیث:۲۰۱۲)

(۱۴)برتن وغیرہ ڈھنک دینا۔(مسلم:باب الأمر بتغطیۃ الاناء، حدیث:۲۰۱۲)

(۱۵)عام لباس اتار کر ہلکا لباس پہننا ۔جوسونے کیلئے آرام دہ ہوں۔ (بخاری: سورۃ ال عمران، حدیث:۴۲۹۴)

 (۱۶)بستر اتنا آرام دہ نہ ہوکہ صبح اٹھنے میں حرج ہو۔(شمائل ترمذی: باب ما جاء فی فراش النبی صلی اللہ علیہ وسلم)

(۱۷)اچھا خواب دیکھے تو خدا کا شکر بجالانا۔ (بخاری: ۶۶۳۷)

(۱۸)برا اور ڈراؤنا خواب دیکھے تو اس خواب سے خدا کی پناہ مانگنا اور کسی سے اس کا ذکر نہ کرنا

اور ان کلمات کا کہہ کر بائیں جانب تھتکار نا اور کروٹ بدل کر سونا: ’’اعوذ بااللہ من الشیطن الرحیم‘‘

 (بخاری: باب من رأی النبی صلی اللہ علیہ وسلم فی المنام ، حدیث: ۶۵۹۴)

یا اس دعا کا پڑھنا:

’’اعوذ بکلمات اللہ التامۃ من غضبہ وعقابہ وشر عبادہ ومن ھمزات الشیطین وان یحضرون‘‘ (ابوداؤد:ؔ ۳۸۹۳)

(۱۹)سرمہ لگانا،ہر آنکھ میں تین تین مرتبہ۔(شمائل ترمذی: ۴)

(۲۰)نیند سے بیدار ہوتواس دعا  کاپڑھنا:

الْحَمْدُ لِلَّهِ الَّذِي أَحْيَانَا بَعْدَمَا أَمَاتَنَا وَإِلَيْهِ النُّشُورُ

 (۲۱)استغفار کرکے سونا۔(سنن ترمذی:۳۳۹۷)

(۲۲)سونے سے قبل دل کو حسد اورکینہ سے پاک کرکے سونا۔(سنن ترمذی:۲۶۷۸)

(۲۳)تہجد کی نیت کرکے سونا۔(سنن نسائی:۱۷۸۸)

(۲۴)ذکر کرتے ہوئے سونا۔(آل عمران :۱۹۱)

(۲۵)دوآدمیوں یا دو عورتوں کا ایک بستر میں نہ سونا۔(سنن ترمذی:۲۷۹۳)

(۲۶)ایسی جگہ نہ سونا جہاں سے گرنے کا اندیشہ ہو۔(سنن ابو داؤد :۵۰۴۱)

 (۲۷)بیٹھے ہوئے مجمع کے درمیان نہ سونا۔ (مجمع الزوائد:۱۳۱۸۶)

 (۲۸) راستہ اور لوگوں کی گزر گاہ ہو۔ (مجمع الزوائد:۱۳۱۸۶)

یہ سونے کی سنتوں اور آداب کا خلاصہ  احادیث کی روشنی میں ذکر کیا گیا،اس سے متعلق تفصیلات درج ذیل کتب میں دیکھی جاسکتی ہیں

(۱)اسورہٴ رسوم اکرم صلی اللہ علیہ وسلم

(۲) خصائص نبوی شرح شمائل ترمذی

(۳) شمائل کمبری

(۴) ”مسنون معاشرت“ احکام و آداب اسوہٴ نبوی کی روشنی

(۵) سنن و آداب وغیرہ میں  دیکھی جاسکتی ہیں

واللہ اعلم بالصواب