Saturday | 16 November 2019 | 19 Rabiul-Awal 1441

Fatwa Answer

Question ID: 456 Category: Miscellaneous
Sunnah Way of Entering home

Assalamualaikum, 

What is the way to enter into the house. Left feet first or the right one? Similarly, when going out should a person take right feet out first or left feet? 

Jazakallah

الجواب وباللہ التوفیق

The masnoon way to enter the house is the following:

  1. Announce your arrival by clearing the throat a bit (or make such a sound) before entering the house so the family members inside are aware that you are coming.
  2. Say salaam while entering the house.
  3. Enter the house while reciting this dua:

اَللّٰہُمَّ اِنِّیْ اَسْئَلُکَ خَیْرَ الْمَوْلِجِ وَخَیْرَالْمَخْرَجِ، بِسْمِ اللّٰہِ وَلَجْنَا، وَبِسْمِ اللہِ خَرَجْنَا، وَعَلیَ اللہِ رَبِّنَا تَوَکَّلْنَا۔ (سنن أبي داؤد:رقم : ۵۰۹۶ )

  1. Enter with the right foot first.

کان النبی ﷺ یحب التیمن ما استطاع(صحیح بخاری: ۴۱۶)

Similarly while exiting the house:

  1. Say salaam.
  2. Exit with the left foot first.
  3. Recite the du’aa of exiting the house.
  4. In some narrations it is mentioned to pray two rakaats after entering and before exiting the house. This protects a person from grief and distress.

عن أبي ہریرۃ رضي اللہ عنہ عن النبي صلی اللہ علیہ وسلم قال : إذا دخلت منزلک فصلِّ رکعتین تمنعانک مدخلَ السُّوئِ، وإذا خرجتَ من منزلک فصل رکعتین تمنعانک مخرجَ السُّوء۔ (المسند للإمام البزار، مجمع الزوائد ۲؍۵۷۲)

والسلام

 

Question ID: 456 Category: Miscellaneous
گھر میں داخل ہونے کا مسنون طریقہ:

گھر میں داخل ہونے کا  مسنون  طریقہ کیا  ہے؟ پہلے بایاں پاؤں یا دایاں پاؤں ؟ اسی طرح گھر سے نکلتے ہوئے پہلے دایاں پاؤں باہر نکالنا  چاہیے یا بایاں ؟

جزاک اللہ

الجواب وباللہ التوفیق:

گھر میں داخل ہونے کا طریقہ یہ ہے  ۔ (۱) داخل ہونے سے قبل کھنکارے۔(۲)سلام کرتے ہوئے داخل ہوں۔ (۳)یہ  دعا پڑھتے ہوئے داخل ہوں :

اَللّٰہُمَّ اِنِّیْ اَسْئَلُکَ خَیْرَ الْمَوْلِجِ وَخَیْرَالْمَخْرَجِ، بِسْمِ اللّٰہِ وَلَجْنَا، وَبِسْمِ اللہِ خَرَجْنَا، وَعَلیَ اللہِ رَبِّنَا تَوَکَّلْنَا۔ (سنن أبي داؤد:رقم : ۵۰۹۶ )

پہلے دایاں پاؤں گھر میں رکھیں پھر بایاں۔کان النبی ﷺ یحب التین ما استطاع(صحیح بخاری: ۴۱۶)

ایسے ہی جب گھر سے نکلے تو سلام کریں ،پہلے بایاں پاؤں باہر نکالیں ۔دعا پڑھیں۔بعض روایات میں ہےدخول اور خروج کے وقت دو رکعت پڑھنا چاہیے۔ اس سے مصائب اور پریشانیوں سے  حفاظت ہوتی ہے۔

عن أبي ہریرۃ رضي اللہ عنہ عن النبي صلی اللہ علیہ وسلم قال : إذا دخلت منزلک فصلِّ رکعتین تمنعانک مدخلَ السُّوئِ، وإذا خرجتَ من منزلک فصل رکعتین تمنعانک مخرجَ السُّوء۔ (المسند للإمام البزار، مجمع الزوائد ۲؍۵۷۲)

واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب