Thursday | 14 November 2019 | 17 Rabiul-Awal 1441

Fatwa Answer

Question ID: 76 Category: Miscellaneous
Guidance About Difficult Family Situation

Assalamualaikum Warahmatullah

I am 18 years old and have two younger siblings. For the past year, my father has been threatening to kick us out of the house and has been wrongfully accusing me and my mother of horrible crimes in which we have no involvement such as adultery. We told his brothers and they took him to a psychiatrist, he is now on medication. But, it is evident that everyone is on his side. Because they've been deceived for so long as to who he is and what we had been hiding from everyone for so long, no one believes us. I think one day I'll have to take my mother and my younger siblings away from him. But in the meantime, what can I do to help my mother and siblings when we are so alone and afraid? 

Walaikumassalam Warahmatullah

الجواب وباللہ التوفیق

First of all, we recommend that you and the family refrain from any such actions which may lead to your father having any suspicions. Be strong, create a deeni atmosphere in your home, perform ta‘leem at home, and make a habit of reading supplications such as the dua for entering and leaving the house, the masnoon supplications of morning and evening etc. Try to respectfully bring this situation in front of some elderly and respected family members and try to have your father counseled through them. InshahAllah, this will bring softness and clarity in his heart and will lead to ultimately freeing you and the family from the set of mentioned issues.

والسلام

Question ID: 76 Category: Miscellaneous
مشکل گھریلو حالات میں راہنمائی

 

 

السلام علیکم ورحمۃ اللہ

میں ایک ۱۸ سالہ ہوں، میرے دو چھوٹے بہن بھائی ہیں۔ پچھلے ایک سال سے ہمارے والد صاحب ہم سب کو گھر سے باہر نکالنے کی دھمکیاں دیتے رہتے ہیں۔ اور بلا وجہ مجھ پر اور میری ماں پر زناکاری جیسے گھناؤنے الزامات لگاتے جا رہے ہیں، جبکہ ہمارا ایسے کاموں سے کوئی تعلق نہیں۔ ہم نے ان کے بھائیوں کو بتایا تو وہ ان کو ایک ڈاکٹر کے پاس لے گئے، اب وہ دوا لیتے ہیں۔ لیکن یہ بات ظاہر ہے کہ سب انہی کی طرف ہیں ، اور چونکہ اتنے لمبے عرصے تک دوسرے لوگ ان کے دھوکے میں رہے، اور ہم لوگوں نے بھی ان کی اصلیت چھپا کر رکھی، اب ہماری بات پر کوئی یقین نہیں کرتا۔ مجھے ایسا لگتا ہے کہ ایک دن مجھے اپنی ماں اور اپنے چھوٹے بہن بھائیوں کو لے کر اس گھر سے نکل جانا پڑے گا، لیکن جب تک ہم اس گھر میں ہیں میں اپنی ماں اور بہن بھائیوں کی مدد کرنے کے لئے کیا کروں؟ ہم لوگ اکیلے ہیں اور خوف محسوس کرتے ہیں۔

 

 

 

وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

الجواب وباللہ التوفیق

آپ لوگ اولا ان چیزوں سے بچیں جو والد محترم کو شکوک وشبہات میں ڈالنے والی ہوں،ہمت رکھیں،گھر میں دینی ماحول بنائیں،تعلیم کا اہتمام کریں،اور روزہ مرہ کے اعمال میں بالخصوص گھر میں داخل ہوتے اور نکلتے وقت اور صبح اور شام کی مسنون دعاؤں کا اہتمام کریں،اور خاندان کے بڑے اورذی وقعت اور سمجھ دارحضرات کے سامنے ساری صورت حال رکھی جائے،اور ان کےذریعہ والد کو سمجھائیں، انشاء اللہ اس کے ذریعہ ان کا دل صاف اور نرم ہو گا ۔ اور اس صورت حال سے نجات بھی ملے گی۔

والسلام