Thursday | 09 December 2021 | 4 Jamadiul-Awal 1443
Gold NisabSilver NisabMahr Fatimi
$5015.81$441.39$1103.48

Fatwa Answer

Question ID: 791 Category: Worship
Water used to wash impurity from floor

Assalamualikum,

I want to ask if I wash a tiled floor by pouring water on the wet impurity, is the water standing on the floor considered impure?

Moreover, if after pouring water, I shower and after showering, water reaches outside the bathroom, is that water considered impure as it is shower water mixed with the water with which impurity was washed?

What if some water goes down the drain? Is the rest of the water then considered pure?

الجواب وباللہ التوفیق

  1. If wet impurity is washed on tiled floor then due to mixing wih this impurity the water standing on the floor would become impure.
  2. Yes, the water used for taking shower would become impure after mixing with impure water.
  3. One should flow impure water and the shower water to the extent that one should have conviction that the impurity and the impure water would have gone then it would become pure. But one should remember that if there is impurity at the place of taking shower then firstly one should wash it for cleaning then he or she should make Wudu or Ghusl there.
  4. والنجاسۃ ضربان مر ئیۃ وغیر مرئیۃ فما کان منھا مر ئیا فطھارتھا بزوال عینھا الخ وما لیس بمرئی فطھارتہ ان یغسل حتی یغلب علی ظن الغاسل انہ قد طھر الخ (ہدایہ باب الا نجاس ج۱ ص ۷۴)

 واللہ اعلم بالصواب

Question ID: 791 Category: Worship
ناپاک فرش کو دھونے میں استعمال شدہ پانی

السلام علیکم

میں معلوم کرنا چاہتا ہوں کہ اگر میں ٹائلوں کے فرش پر گیلی ناپاکی کو دھونے کے لیے  پانی ڈالوں تو کیا فرش پر کھڑا پانی ناپاک ہوگا؟

اگر پانی ڈالنے کے بعد میں غسل کروں اور غسل کا پانی غسل خانے سے باہر چلا جائے تو کیا وہ پانی ناپاک سمجھا جائے گا کیونکہ یہ غسل کا پانی اس پانی سے مل گیا ہے جس سے ناپاکی کو دھویا گیا؟

اگر پانی نالی سے نیچے چلا جائے تو کیا ہوگا؟ تو کیا باقی پانی پاک سمجھا جائےگا؟

الجواب وباللہ التوفیق

(۱)ٹائلوں کے فرش پر گیلی ناپاکی دھوئی جائے تو فرش پر کھڑا پانی اس ناپاکی سے ملنے کی وجہ سے ناپاک ہوجائے گا ۔(۲) ہاں غسل کا پانی ناپاک پانی سے ملنے کی وجہ سے نا پاک ہو جائے گا۔

(۳)ناپاک پانی اور غسل کے پانی کو اتنا بہانا چاہیےکہ جس سے ناپاکی اور ناپاک  پانی کے چلے جانے کا ظن غالب ہوجائے تو وہ پاک ہوجائے گا۔

لیکن یہ یاد رکھنا چاہیےکہ اگر غسل کی جگہ ناپاکی وغیرہ ہوتو اولا اس کو دھوکر صاف کرنا چاہیے،پھر اس میں وضو یا غسل کرنا چاہیے۔

والنجاسۃ ضربان مر ئیۃ وغیر مرئیۃ فما کان منھا مر ئیا فطھارتھا بزوال عینھا الخ وما لیس بمرئی فطھارتہ ان یغسل حتی یغلب علی ظن الغاسل انہ قد طھر الخ (ہدایہ باب الا نجاس  ج۱ ص ۷۴)

واللہ اعلم بالصواب