Tuesday | 23 October 2018 | 14 Safar 1440

Fatwa Answer

Question ID: 84 Category: Worship
Early Termination of Haidh and Salah

Assalamualaikum Warahmatullah

My period stopped last night which was the sixth day. My usual habit is seven days.  In this situation, do I have to perform qadha for seventh day or will it be counted as part of my period given the usual habit?

JazakAllahu Khaira

 

الجواب وباللہ التوفیق

If the number of days of one’s usual menstrual habit have not completed but the bleeding stops, then it is mandatory to perform salah by making ghusl towards the ending time of that salah. The full 7 days will not be considered as haidh, however, until the number of days of the menstrual habit are completed, it is impermissible to establish marital relations. Since the blood had stopped on the 6th day and you had become clean, it is mandatory for you to perform qadha for the salah of the 7th day.

قَوْلُهُ لَمْ يَحِلَّ ) أَيْ الْوَطْءُ وَإِنْ اغْتَسَلَتْ ؛ لِأَنَّ الْعَوْدَ فِي الْعَادَةِ غَالِبٌ بَحْرٌ ( قَوْلُهُ وَتَغْتَسِلُ وَتُصَلِّي ) أَيْ فِي آخِرِ الْوَقْتِ الْمُسْتَحَبِّ ، وَتَأْخِيرُهُ إلَيْهِ وَاجِبٌ هُنَا (رد المحتار:۲/۴۰۱،باب الحیض)

واللہ اعلم بالصواب

Question ID: 84 Category: Worship
عادت سے قبل حیض کا رکنا اور نماز کا حکم

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

میرا حیض کل رات رک گیا جو کہ چھٹا دن تھا، حالانکہ میری عام عادت سات دن حیض آنے کی ہے۔ اس مسئلہ میں کیا مجھے ساتویں روز کی نمازیں قضا پڑھنی پڑیں گی یا پھر یہ دن میرے حیض میں ہی شمار ہو گا چونکہ میری عادت سات دن کی ہے؟جزاک اللہ خیرا ۔

الجواب وباللہ التوفیق

اگر ایامِ عادت ختم ہونے سےپہلے خون منقطع ہوجائے تو ایسی صورت میں خون بندہونے کے بعد نماز کے آخری وقت میں غسل کرکے نماز پڑھناضروری ہے،پورے سات دن حیض کے شمار نہیں ہوں گے۔ لیکن جب تک ایام عادت پورے نہ ہوجائیں اس وقت تک ہمبستری جائز نہیں۔چونکہ چھٹے دن ہی خون کا انقطاع ہوکر آپ پاک ہوچکی تھیں اس لئے آپ ساتویں دن کی نمازوں کی قضاء ضروری ہے۔

قَوْلُهُ لَمْ يَحِلَّ ) أَيْ الْوَطْءُ وَإِنْ اغْتَسَلَتْ ؛ لِأَنَّ الْعَوْدَ فِي الْعَادَةِ غَالِبٌ بَحْرٌ ( قَوْلُهُ وَتَغْتَسِلُ وَتُصَلِّي ) أَيْ فِي آخِرِ الْوَقْتِ الْمُسْتَحَبِّ ، وَتَأْخِيرُهُ إلَيْهِ وَاجِبٌ هُنَا (رد المحتار:۲/۴۰۱،باب الحیض)

فقط واللہ اعلم بالصواب