Tuesday | 12 November 2019 | 15 Rabiul-Awal 1441

Fatwa Answer

Question ID: 320 Category: Worship
Eating after Fajr prayer on Eid ul Adha

Assalamualaikum,

I know one of the sunnahs on Eid ul Adha is not to eat before leaving for Eid prayer and then eating with the qurbani one offers.

But I have couple of questions:

  1. What is the ruling on eating after/around Fajr prayer on Eid ul Adha? For example, if fajr is at 0600 hrs and Eid prayer is at 0830 hrs, can I drink anything after Fajr prayers? If I have been doing opposite of the ruling unknowingly, what is the kaffarah?
  2. One should eat from the qurbani offered per Sunnah. Sometimes the qurbani takes too long to offer due to the services offered at the farm, etc. Is there a cut off time after which one can eat anything if doing qurbani is taking too long?

الجواب وباللہ التوفیق

It’s only Preferred not to eat before Salat ul Eid on Eid ul Adha, if there is any excuse then there is no harm in eating, and even after Salat ul Eid to begin eating with the Qurbani meat is also Preferred only, it’s not Fard or Wajib. Therefore, if one feels hungry or there is delay in doing the Qurbani then still there is no sin or harm in eating or drinking other things.

واللہ اعلم بالصواب

Question ID: 320 Category: Worship
عید الاضحی کے دن فجر کے بعد کھانا

السلام علیکم

میں یہ چانتا ہوں  کے عید الاضحیٰ کی ایک سنت کہ عید کی نماز پڑھنے کے لیے جانے سے پہلے کوئی چیز نہ کھائی جائے اور پھر قربانی کرکے اس کا گوشت کھایا جائے،  لیکن میرے دو سوال ہیں:

عید الاضحیٰ کے دن فجر کے وقت یا اس کے بعد کھانے کا کیا حکم ہے؟ مثال کے طور پر اگر فجر ۶ بجے ہے اور عید کی نماز ۸:۳۰ بجے ،کیا میں فجر کے بعد کچھ پی سکتا ہوں؟ اگر میں ابھی تک شرعی حکم کے خلاف کرتا رہا ہوں تو اس کا کیا گناہ ہے؟

اگر قربانی میں بہت دیر لگ رہی ہے تو کیا وقت  کی کوئی قید ہے کے اس کے بعد  آدمی کچھ بھی کھاسکے اگر قربانی اس وقت تک بھی نہ ہوئی ہو؟

لجواب وباللہ التوفیق

عیدالاضحی میں نماز عید سے پہلے کچھ نہ کھانا صرف مستحب ہے اگر کوئی عذر ہوتو کھانے میں کوئی حرج نہیں۔اورعید کے بعدبھی  اپنی قربانی کے گوشت سے کھانے کی ابتداء کرنا بھی صرف مستحب ہے فرض یاواجب نہیں لہذا اگر بھوک لگی ہویا قربانی تاخیر سے کرنی ہوتب بھی دیگر چیزیں کھانے پینے میں کوئی حرج اور گناہ نہیں ہے

واللہ اعلم بالصواب