Friday | 24 May 2019 | 19 Ramadhan 1440

Fatwa Answer

Question ID: 340 Category: Permissible and Impermissible
Girls Learning Horseback riding as Sunnah

Assalamualaikum,

May Allah سبحانه وتعالى gives you all tremendous good rewards in this world and the hereafter. Aameen

Please let me know is it permissible for a 12 -13 years old girl (baligh) to learn horseback riding as following Sunnah. 

Jazakumullah!

الجواب وباللہ التوفیق

The motivation given in the Ahadith to learn horse riding is actually for the boys, not for the girls. It comes in the Hadith:

خير لهو المؤمن السباحة وخير لهو المرأة المغزل  (كنز العمال: 40611)

Translation: The best play for the Momin is swimming and the best play for the woman is to spin the yarn.

However, if a girl learns horse riding covering herself completely and abiding by all the Shar’ai limits then there is room for it.

عن عبد اﷲ بن عبد الرحمن بن أبي حسین أن رسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم-إلی-کل ما یلہوبہ الرجل المسلم باطل، إلا رمیہ بقوسہ، وتادیبہ فرسہ، وملا عبتہ أہلہ، فإنہن من الحق۔ (سنن الترمذي، باب ماجاء في فضل الرمي في سبیل اﷲ، النسخۃ الہندیۃ۱/۱۹۳، دارالسلام رقم:۱۶۳۷)

ہ اعلم بالصواب

 

Question ID: 340 Category: Permissible and Impermissible
لڑکیوں کا سنت کے طور پر گھڑ سواری سیکھنا

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

اللہ سبحانہ وتعالیٰ دنیا وآخرت میں آپ کو بے انتہا جزائے خیر عطا فرمائے آمین

برائے مہربانی بتائیے کیا ایک ۱۲ ، ۱۳ سالہ بالغ لڑکی کے لیے سنت کو اپنانے کی نیت سے گھوڑ سواری سیکھنے کی اجازت ہے؟

جزاکم اللہ 

 

 

 الجواب وباللہ التوفیق

احادیث میں گھوڑ سواری کی جو ترغیب ہے وہ در اصل  لڑکوں کے لئے ہے،لڑکیوں کے لئے نہیں،حدیث میں ہے 

خير لهو المؤمن السباحة وخير لهو المرأة المغزل  (كنز العمال: 40611)

مومن کا بہترین کھیل تیراکی ہے اور عورت کا بہترین کھیل  سوت کاتنا ہے۔

تاہم اگر کوئی لڑکی مکمل پردہ میں شریعت کے  حدود کی رعایت کرتے ہوئے اسے سیکھے تو اس کی گنجائش ہے۔

عن عبد اﷲ بن عبد الرحمن بن أبي حسین أن رسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم-إلی-کل ما یلہوبہ الرجل المسلم باطل، إلا رمیہ بقوسہ، وتادیبہ فرسہ، وملا عبتہ أہلہ، فإنہن من الحق۔ (سنن الترمذي، باب ماجاء في فضل الرمي في سبیل اﷲ، النسخۃ الہندیۃ۱/۱۹۳، دارالسلام رقم:۱۶۳۷) 

واﷲ اعلم بالصواب