Tuesday | 12 November 2019 | 15 Rabiul-Awal 1441

Fatwa Answer

Question ID: 91 Category: Business Dealings
Marriage with Shia

Assalamualaikum Warahmatullah

I am a sunni Muslim man and want to know if it is permissible to marry a shia woman who is a follower of the Jafri sect. Please advice if permissible and if not please explain in detail why. It is an immediate emergency as my parents are not convinced that it is allowed.

الجواب وباللہ التوفیق

If the girl has kufria (non-Islamic) beliefs such as accusing Hazrat Ayesha RaziAllah Ta‘ala Anha, denying Hazrat Abu Bakar Siddique RaziAllah Ta‘ala Anhu’s status as a companion or Khaleefa of Rasulullah Sallallaho Alyhi Wasallam, cursing the sheikhein (i.e. Hazrat Abu Bakar Siddique and Hazrat Umar RaziAllah Ta‘ala Anhu) and disrespecting them, considering Hazrat Ali RaziAllah Ta‘ala Anhu as a diety, believing that Hazrat Jibraeel Alyhissalam made a mistake in delivering the revelation to Rasulullah Sallallaho Alyhi Wasallam, or believes that the words or meanings of the Quran have been altered, or considering any such beliefs which are against the absolute teachings of Quran and Hadith, then she is considered as a kafir and therefore performing Nikah with her will be considered haram. If Nikah is still performed with such a person, the Nikah will not be considered valid or officiated. If however her beliefs are not kufria, then fuqaha (jurists) have disagreement in the ruling. Certain fuqaha still perform takfeer of such individuals while others do not perform takfeer rather perform tafseeq (i.e. consider them as a fasiq). Even in the situation described latter, it is better and recommended to refrain from performing Nikah with her so that the resulting progeny is not corrupted and brought up with correct beliefs and their faith can be safeguarded.

واللہ اعلم بالصواب

Question ID: 91 Category: Business Dealings
شیعہ کے ساتھ شادی کا حکم

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

میں ایک سنی مسلمان ہوں اور یہ جاننا چاہتا ہوں کہ کیا اک مسلمان مرد کا شیعہ عورت کے ساتھ نکاح کرنا جائز ہے جو فقہ جعفری کی ماننے والی ہو؟ براہ کرم یہ فرمائیے کہ یہ جائز ہے یا اگر ناجائز ہے تو اس کی تفصیل بھی فراہم کیجئے کہ کیوں ناجائز ہے۔ یہ ایک بہت بڑا مسئلہ بنا ہوا ہے کیونکہ میرے والدین کا کہنا یہ ہے کہ ان کے خیال میں ایسا نکاح جائز نہیں۔

 

 

 

 

الجواب وباللہ التوفیق

وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ

اگر لڑکی کےکفریہ عقائدہوں مثلاً حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا پر تہمت لگانا یاحضرت ابوبکرصدیق رضی اللہ عنہ کی صحبت اور خلافت کا انکار کرنایا شیخین کوگالیاں دینا اور ان پر لعن طعن کرنا، حضرت علی رضی اللہ عنہ کی الوہیت کا قائل ہونا ،یاحضرت جبرئیل علیہ السلام کے متعلق اعتقادرکھنا کہ انہوں نے رسول اللہ ﷺ کے پاس وحی پہنچانے میں غلطی کی یا تحریف قرآن کا قائل ہونا یا اورکوئی ایساعقیدہ رکھنا جو صریح قرآن وحدیث اور نصوص قطعیہ کے مخالف ہے تووہ کافرہے،اس لئے اس سے نکاح حرام ہے،اور اگر نکاح کیاجائے تو وہ نکاح منعقد ہی نہیں ہوگا۔ اور اگر اس کا عقیدہ کفریہ نہیں ہے تواس میں فقہاء کرام کا اختلاف ہے، بعض تکفیر کرتے ہیں اور بعض تکفیر نہیں کرتے صرف تفسیق کرتے ہیں، ایسی صورت میں بہتریہی ہے کہ اس سے بھی نکاح سے اجتناب کیاجائے۔تاکہ کل کے دن بچوں اور اس کی نسلوں کی غلط تربیت اور ذہن سازی نہ ہو۔اور ان کے دین وایمان کی حفاظت ہو۔

''ان الرافضی ان کان ممن یعتقد الالوہیة فی علی اوان جبریل غلط فی الوحی اوکان ینکرصحبة الصدیق اویقذف السیدة الصدیقة فہوکافر لمخالفتہ القواطع المعلومة من الدین بالضرورة بخلاف مااذاکان یفضل علیااویسب الصحابة فانہ مبتدع لاکافر''…(فتاویٰ شامی:٣١٤/٢)

وقال شیخ الاسلام ابن تیمیة قال القاضی ابویعلی من قذف عائشة بمابرء ہا اللہ تعالی منہ کفربلاخلاف ''…(مجموعہ رسائل ابن عابدین :٣٥٨/١)

وانا لہ لحفظون من التحریف والزیادة والنقصان ولایتطرق الیہ الخلل ابدا……ویل للرافضة حیث قالوا قدتطرق الخلل الی القرآن وقالوا ان عثمان وغیرہ حرقوہ القوہ منہ عشرة اجزاء ''…(تفسیرالمظہری : ١٥٥/٥)''

۔''نعم لاشک فی تکفیر من قذف السیدة عائشة رضی اللہ عنہا اوانکرصحبة الصدیق اواعتقد الالوہیة فی علی اوان جبریل غلط فی الوحی اونحوذلک من الکفر الصریح المخالف للقرآن''…(ردالمحتار:٣/٣٢١)

''اقول نعم نقل فی البزازیة عن الخلاصة ان الرافضی اذاکان یسب الشیخین ویلعنہما فہو کافر وان کان یفضل علیا علیہما فہو مبتدع اھ وہذا لایستلزم عدم قبول التوبة علی ان الحکم علیہ بالکفر مشکل لمافی الاختیار اتفق الائمةعلی تضلیل اہل البدع اجمع وتخطئتہم وسب احد من الصحابة وبعضہ لایکون کفرا لکن یضلل''…(ردالمحتار:٣/٣٢١)''ومنہا اسلام الرجل اذاکانت المرء ة مسلمة فلایجوز انکاح المؤمنة الکافر لقولہ تعالی ولاتنکحوا المشرکین حتی یؤمنوا''…(بدائع الصنائع : ٢/٥٥٤)

فقط واللہ اعلم بالصواب